مسجد کی فضیلت

مسجد کی فضیلت

    رسول اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا:

إذا رأيتم الرجل يتعاهد المسجد فاشهدوا له بالإيمان


جب تم کسی شخص کو مسجد کی خبر گیری کرتے ہوئے دیکھو تو اس کے ایمان کی گواہی دو ۔


( ترمذی ، کتاب الایمان ، باب ما جاء فی حرمۃ الصلاۃ ، حدیث نمبر: ٤٨٢٦ )

رسول اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا:

اَحَبُّ الْبِلَادِ اِلَى اللّٰهِ مَسَاجِدُهَا

“اللّٰه کے نزدیک سب سے زیادہ محبوب جگہ مسجدیں ہیں”
(مسلم)

تشریح:

مسجد ایسی جگہ ہے جہاں پہنچ کر آدمی اپنے تمام برے کاموں اور برے خیالات سے پاک ہو جاتا ہے۔وہاں پہنچ کر اللّٰه کی یاد میں لگتا ہے اور خُدا تعالی سے اپنے تعلقات میں اضافہ کرتا ہے،یہ عمل اللّٰه تعالی کو پسند ہے اس لئیے اس کا مقام یعنی مسجد بھی محبوب ہے،

☝️اور چونکہ یہ جگہ اللّٰهِ تعالی کو محبوب ہے اس لئیے اس کا احترام بھی بہت کرنا چاہئیے وہاں دنیا کی باتیں یا شور ہنگامہ بلکل نہیں کرنا چاہئیے۔

🌀اور مسجد محبوب ہونے کا ایک مطلب یہ بھی ہو سکتا ہے کہ وہ جگہ اللّٰه تعالی کو زیادہ پسند ہے جس کی وجہ سے وہاں اس کی رحمتیں اور برکتیں ہر وقت نازل ہوتی رہتی ہیں،

☝️اس لئیے جس شخص کو اللّٰه تعالی کی رحمتوں اور برکتوں کے حاصل ہونے کا شوق ہو وہ مسجد کی حاضری کا پابند رہے اور فارغ اوقات کو بھی مسجد ہی میں صرف کرے۔

❌اس کے برخلاف بازار اللّٰه تعالی کی ناپسندیدہ جگہ ہے جہاں بس اپنی ضرورت کےلئیے جانا چاہئیے۔ بلا ضرورت بازاروں میں پھرنا بہت سے خطرناک گناہوں کا سبب ہوتا ہے۔

! عام طور پر آدمی وہاں پہنچ کر آخرت سے غفلت کا شکار ہو جاتا ہے جو کہ اللّٰه تعالی کو پسند نہیں آج کل دکان دکان پھرنا،باالخصوص خواتین کے لیے ایک مشغلہ کی صورت اختیار کر گیا ہے جس کی وجہ سے بازار،عریانی و فحاشی کا ایک بڑا مرکز بن گئے ہیں،ظاہر ہے کہ ایسے مراکز کا اللّٰه کی نظر میں ناپسندیدہ ہونا بلکل واضح ہی ہے

☝️ اور جس چیز سے مالک حقیقی بغض و ناپسندیدگی کا اظہار کر دے اس سے بچنا انتہائی ضروری ہے۔

********