پیامِ مشرق:خطر تاب و توان را امتحان است

پیامِ مشرق:خطر تاب و توان را امتحان است

خطر تاب و توان را امتحان است
عیار ممکنات جسم و جان است

ترجمہ:
خطرہ ہمت اور حوصلے کا امتحان ہوتا ہے۔
جسم اور روح کے امکانات کی کسوٹی(معیار) ہوتا ہے۔

For danger brings out what is best in you:
It is the touchstone of all that is true.