کہاں سے تونے اے اقبال سيکھی ہے يہ درويشی

کہاں سے تونے اے اقبال سيکھی ہے يہ درويشی

کہاں سے تونے اے اقبال سيکھی ہے يہ درويشی
کہ چرچا پادشاہوں ميں ہے تيری بے نيازی کا

Kahan Se Tu Ne Ae Iqbal Seekhi Hai Darveshi
Ke Charcha Padshahon Mein Hai, Teri Be-Niazi Ka

O Iqbal! From where did you learn to be such a dervish
Even among the kings there is talk about your contentment