کپوارہ کا سرحدی علاقہ بڈھ نمبل سرکار کی نظروں سے اوجھل

کپوارہ کا سرحدی علاقہ بڈھ نمبل سرکار کی نظروں سے اوجھل

15 جنوری 2021

جمعہ: 01 جمادی الثانیہ 1442ھ

تعمیل ارشاد: صفحہ نمبر :5

فیضان قریشی

سرحدی ضلع کپوارہ کا دور دراز علاقہ بڈھ نمبل جوکہ ضلع ہڑکوارٹر سے 50 کلومیٹر دور ALC پر واقع ہے کے لوگ گونا گوں مشکلات سے دوچا ہے۔
یہ علاقہ ابھی بھی ع برف سے ڈھکا ہوا ہے۔
بڈھ نمبل کو باقی علاقوں سے جوڑنے والی واحد سڑک چوکیبل بڈھ نمبل سڑک ہنوز برف سے ڈھکی ہوئی ہے اگرچہ برف اٹھانے کا کام شروع کردیا گیا ہے لیکن ابھی تک یہ سڑک قابلِ آمد و رفت نہیں ہے جس کی وجہ سے لوگ طرح طرح کی مشکلات سے دوچار ہے۔
ہسپتال نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کو اس شدید سردی میں مریضوں کو چارپائییوں پر اٹھاکر چوکیبل یا کپوارہ علاج کرنے کے لٸے لینا پڑتا ۔
اس علاقے میں موبائیل ٹاور بھی نہیں ہے جس کی وجہ سے یہ لوگ باقی دنیا کی معلومات سے بالکل بےخبر رہتے ہیں۔ انٹرنٹ کی عدم دستیابی سے طلاب اور ملازمین کو بہت دشواریوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور طلبہ کا مستقبل تاریک ہونے کا اندیشہ ہے ۔

ستم ظریفی یہ ہے کہ اس علاقے میں پانی کی فراہمی کا نظام بالکل نا ہونے کے برابر ہے۔ دہائیوں پہلے بچھائی پائپیں بوسیدہ ہوچکی ہے اور عورتوں کو ٹھٹھرتی سردی اور دشوار راستوں سے ہوکے دور دور سے پانی لانا پڑتا ہے۔
وہاں کے مقامی لوگوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ان کی مشکلات پر توجہ دے اور ان کے جائز مطالبات کو پورا کرے تاکہ ان کی مشکلات کا ازالہ ہو سکیں اور انہیں مزید دشواریوں کا سامنا نہ کرنا پڑے۔