نعتیہ دعا: مجھے بھی مــدینے بـلا میرے مـولا

نعتیہ دعا: مجھے بھی مــدینے بـلا میرے مـولا

مجھے بھی مــدینے بـلا میرے مـولا
کــرم کی تجلی دکھا میـرے مـولا
بہت بےقراری کے عالم میں ھوں میں
میری بے قراری مٹا میرے مـولا

سنا ہے مـدینہ کــرم ہی کــرم ہے
تو رکھتا جہاں میں سبھی کا بھرم ہے
تجھے واسطہ تیرے پیارے نبی ﷺ کا
میری اب تو بگڑی بنا میرے مـولا

جسے تـو نے چاہا میں اس پہ فـدا ھوں
میں تیرے مُحَمــد ﷺ کے دَرکا گـدا ھوں
تجھے واسطہ کربـلا کی زمیں کا
مجھے ھر بلا سے بچا میرے مـولا

شفاعت کا وعدہ کیا تو نے جس سے
گناہگار امید رکھتے ہیں اس سے
سفارش کریں تجھ سے امت کی آقـاﷺ
تو کرنا سبھی کا بھلا میرے مـولا

محمــد ﷺ کو تو نے جو قرآں دیا ھے
کروڑوں دلوں میں مکمل چھپاھے
اے قرآں کے خالق گذارش ھےتجھ سے
میرے دل میں قرآں بسا میرے مـولا

میری مشکلیں گر تیرا امتحاں ہیں
تو ہر غم قسم سے خوشی کا سماں ھے
گناہوں کی میرے اگر یہ سزا ھے
تو پھر مشکلوں کو گھٹا میرے مـولا

یہاں پل میں بدلے ہوئے لوگ پائے
وہاں پل میں اپنے بھی دیکھے پرائے
تجھے تو ہمارے دلوں کی خبر ھے
کریں تجھ سے کس کا گلہ میرے مـولا

نگاہوں سے پنہاں کیوں منزل میری ھے
کیوں منجدھار میں ناؤ میری پھنسی ھے
خطاؤں کا مارا بھی پالے گا ساحل
گر عابد کے دل میں سما میرے مـولا