نعت رسول مقبولﷺ: نظارے ہیں گو لاکھوں جہاں بھر کے نظر میں

نعت رسول مقبولﷺ: نظارے ہیں گو لاکھوں جہاں بھر کے نظر میں

بسم اللّٰہ الرحمٰن الرحیم

نظارے ہیں گو لاکھوں جہاں بھر کے نظر میں
ہے کیف مگر اور مدینے کے سفر میں

اے صاحبِ ﷺ لو لاک تری بھیک کی خاطر
بیٹھے ہیں شہنشاہ تری راہ گزر میں

اے گنبد خضرا ترے انوار پہ قرباں
کچھ فرق نظر آتا نہیں شام و سحر میں

ہے جلوہ محبوب ﷺ کی یہ خاص نشانی
آتے ہیں نظر وہ تو کسی دیدہ تر میں

دیکھا جو مدینے میں کہیں اور نہ دیکھا
جلوؤں کو سجائے گا بھلا کون نظر میں

فردوسِ نظر کیوں نہ بنیں وہ در و دیوار
سرکار ﷺ جو آ جائیں گہنگار کے گھر میں

طیبہ کے سوا دیکھوں نہ کچھ اور ظہوری
انوار مدینہ ہیں مرے قلب و جگر میں


محمد علی ظہوری